’’اشارہ‘‘ کرنے والے پہلے عمران کا تیر استعمال کریں گے۔ حافظ حسین احمد

اوکاڑہ( ثناء نیوز) جمعیت علمائے اسلام ف کے مرکزی راہنما حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ میاں نواز شریف نے14اگست کے لئے 14ماہ بعد ہی مشکل سے اپنے حلیفوں سے رابطہ کیا ہے۔عمران خان حریف ہیں لہٰذا وزیر اعظم کے رابطے کے لئے انکا نمبر بہت دور ہے۔چودھری نثار کو پتہ چل گیا کہ سیاست میں کلاس فیلو کا توخیال نہیں رکھا جاتاالبتہ ’’گلاس فیلو‘‘ کا خیال رکھا جائے تو اور بات ہے۔’’اشارہ‘‘ کرنے والے پہلے عمران کا تیر استعمال کریں گے پھر انقلابی تیر کو کمان میں رکھیں گے۔ملکی سیاست میں ’’پرویزیت‘‘ مشترک ہوتی جا رہی ہے۔موٹے پرویز کے بعد ’’کوہ قاف‘‘ والوں کے پاس نکا پرویز ،پی ٹی آئی والوں کے پاس پتلا پرویز اور ن لیگ کے پاس درمیانہ پرویز (پرویز رشید) ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اوکاڑہ پریس کلب میں ٹیلی فونک بات چیت کرتے ہوئے کیا۔حافظ حسین احمد نے کہا کہ اب نوا شریف کو مولانا فضل الرحمان اور محمود خاقن اچکزئی کی بھی ضرورت ہے اور وہ شیر پاؤ اور ’’دیر پاؤ‘‘ سے بھی مل رہے ہیں اور ہو سکتا ہے کہ’’ مٹی پاؤ‘‘ والوں سے بھی ملاقات ہو جائے۔اسی لئے عمران خان وزیر اعظم کے حریف ہیں لہٰذا انکا نمبر ملاقات کے حوالے سے بہت دور ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران جب پتلے پرویز کو اسمبلی توڑنت کا کہیں گے تو پتلے پرویز اور اس اسد قیصر میں فرق واضح ہو جائے گا جسے وزیر اعلیٰ بنتے بنتے روکا گیا۔اگر پتلے پرویز نے کوئی اور سیاسی آشیانہ ڈھونڈ لیا ہے تو پھر وہ تحریک انصاف کوبھی ویسے ہی ڈرائیں دھمکائیں گے جیسے وہ ڈرا دھمکا کر اس جماعت میںآئے اور اس طرح وزرات اعلیٰ حاصل کی۔انہوں نے کہا کہ ایک تو اشارہ کرنے والوں نے قادری کا تیر سنبھال کر رکھا ہے دوسرا شائد ابھی نمازی پورے نہیں ہوئے جنکی قادری کو امامت کرنا ہے اسی لئے انقلاب مارچ کا اعلان نہیں کیا جا رہا۔nn/ah/jk

Archives