مولانا سمیع الحق کی مصری حکومت سے فلسطینی مسلمانوں کی مدد کیلئے سرحدیں کھولنے کی اپیل

نوشہرہ (ثناء نیوز )جمیعت علماء اسلام س کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے مصری حکومت سے فلسطینی مسلمانوں کی مدد کیلئے سرحدیں کھولنے کی اپیل کردی۔مولانا سمیع الحق نے ھدایت پر پاکستان میں مصر کے سفیر کو تحریر طور پر سرحدی کھولنے کی اپیل کردی گئی۔تحریری خط میں مولانا سمیع الحق نے تحرید کیا ہے کہ غزہ فلسطین پر اسرائیل جارحیت کا ایک ماہ ہو چکا ہے وہاں خونی درندوں نے بے گناہ مسلمان بچوں عورتوں معمر افراد کی لاشوں کے ڈھیر کے ڈھیر بنادئیے ہیں اب تک دو ہزار سے زیادہ قیمتی جانوں کو بے دردی سے مار کر ہلاکو خان اور چنگیز خان کی تاریخ دہرائی گئی اسرائیل جیسی غاصب اقلیت نے فلسطینی مسلمانوں کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے۔ اگرچہ ضرورت تو اس امر کی ہے کہ اس مسئلے کو انصاف اور عدل کے اصولوں پر مستقل طور پر حل کیا جائے جس کے لئے عالم عرب کا متفق ہونا ضروری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تاہم موجودہ حالت جنگ میں ہماری جماعت جمعیت علماء اسلام (مولانا سمیع الحق گروپ) آپ سے پوری پاکستانی قوم کی طرف سے اپیل کرتی ہے کہ مظلوم اور مقہور زخمی فلسطینیوں کے علاج معالجے اور دیگر ضروریات زندگی کے لئے آپ اپنی سرحد یں (رفح وغیرہ) کھول دیجیئے یہ انسانی حقوق کا بھی تقاضا ہے اور دوسری طرف ہماری ایمانی اسلامی غیرت و اخوت کا درس بھی یہی ہے ۔انہوں نے مدید کہا کہ ہمیں اس بات کا بھی ادراک ہے کہ مصر اپنے اندرونی مشکلات سے دوچار ہے تاہم حضو ر ﷺ کا ارشاد گرامی ’’المومنون کجسد واحدٍ اذاشتکی بعضہٗ اشتکی کلہ ‘‘ مومنو کی مثال ایک بدن جیسی ہے جب اس کے کسی ایک حصے میں تکلیف ہو تو پورا بدن بے قرار رہتا ہے لہذ اہم ان ہی بنیادوں پر آپ کے توسط سے حکومت مصرتک یہ آواز پہنچانا چاہتے ہیں کہ مصر انسانی حقوق اور اسلامی تقاضوں پر عمل کرتے ہوئے فلسطینیوں کی مدد کیلئے اپنی سرحدیں کھول دیں ۔ pr/shj/ily

Archives