ملک میں بجلی کا شارٹ فال چار ہزار آٹھ سو میگا واٹ تک پہنچ گیا

ملک میں بجلی کا شارٹ فال چار ہزار آٹھ سو میگا واٹ تک پہنچ گیا

اسلام آباد( ثناء نیوز) ملک میں بجلی کا شارٹ فال چار ہزار آٹھ سو میگا واٹ ہوگیا ہے دیہی علاقوں میں اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جا ری ہے جس کی وجہ سے بعض علاقوں میں کا روبار زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا ہے۔، کم وولٹج اور ٹرپنگ معمول بن گئی ہے راولپنڈی اسلام آباد کے بعض علاقوں میں میں ہر گھنٹے بعد ایک گھنٹے کی لوڈشیڈنگ جاری ہے ، دیہی علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ اٹھارہ گھنٹے تک پہنچ گیا۔ ایک نجی ٹی وی کے مطابق ملک میں بجلی کی پیداوار چودہ ہزار آٹھ سو میگا واٹ ہے جبکہ طلب انیس ہزار چھ سو میگا واٹ ہوگئی۔ طلب میں اضافے کے ساتھ شارٹ فال بڑھ کر چار ہزار آٹھ سو میگا واٹ ہو گیا ہے۔ راولپنڈی اسلام آباد میں ہر گھنٹے بعد ایک گھنٹے کیلئے جبکہ دیگر شہروں میں چودہ سے سولہ گھنٹے تک لوڈشیڈنگ جاری ہے۔ دیہی علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ سولہ سے اٹھارہ گھنٹے تک پہنچ چکا ہے۔ راولپنڈی کے علاقے گرجا روڈ پر محلہ قریشی آباد میں گزشتہ پچاس گھنٹے سے بجلی غائب ہے۔ شدید گرمی حبس اور بجلی کی عدم فراہمی کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ پیر کو علاقے کا ٹرانسفارمر خراب ہوا تھا تاحال بجلی بحال نہیں کی جا سکی تین روز سے بجلی کی بندش کے باعث علاقے میں پانی کی بھی قلت پیدا ہو گئی ہے حکام نہ فون اٹھاتے ہیں ناں ہی دفتر میں موجود ہوتے ہیں۔ادھرلاہور میں بھی بجلی کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے شہر کے نواحی علاقہ لیاقت آباد اور محمدی کالونی میں کم وولٹج اور ٹرپنگ معمول بن گئی ہے جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔کم وولٹج سے برقی آلات خراب ہو رہے ہیں جس پر کوئی توجہ نہیں دی جا رہی۔nt/ma/shj/qa

Archives