ٹریفک، تجاوزات، گندگی اور بلدیاتی مسائل نے زندگی اجیرن بنادی ، آل کراچی تاجر اتحاد

کراچی(ثناء نیوز)آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر نے کراچی میں بڑھتے ہوئے متعدد مسائل کو مستقبل میں بڑے بحران کا پیش خیمہ قرار دیتے ہوئے حکومتِ سندھ کو خبردار کیا ہے کہ ٹریفک، تجاوزات، گندگی اور بلدیاتی مسائل نے کراچی کی شہری اور کاروباری زندگی اجیرن بنادی ہے، بازاروں میں کچرا دکانوں کے دروازوں تک امڈ آیا ہے ،کوڑا پیروں سے لپٹنے لگا شہر میں پیدل چلنا بھی دشوار ہوگیا،کراچی ملک کا گندہ ترین شہر بن گیا، ٹریفک کنٹرول ختم اصلاحی و ترقیاتی منصوبے خاک میں مل گئے، عروس البلاد اور معاشی حب کی شناخت لاوارث شہر میں تبدیل ہوگئی، موجودہ صورتحال پر فوری قابو نہ پایا گیا تو نفسانفسی اور افرا تفری پھیل جائیگی اور صورتحال قابو سے باہر ہوجائیگی ان خیالات کا اظہار انھوں نے گذشتہ روز انجمنِ تاجران لیاقت آباد کی جانب سے منعقد کی گئی عید ملن پارٹی میں تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر آل کراچی تاجر اتحاد کے صدر اور انجمنِ تاجران لیاقت آباد کے چیئرمین انصار بیگ قادری،اکرم رانا، زبیر علی خان، احمد شمسی، شاکر فینسی، میر عبدالحئی خان،محمد آصف ،سمیع اللہ خان، سید محمد سعید، رفیع احمد، جنت گُل، شاہد ویانی، محمد فہیم، محمد اسماعیل اور دیگر بھی موجود تھے، عتیق میر نے انتہائی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں تمام حکومتی ادارے اپنی ذمے داریاں فرض شناسی اور ذمے داری سے ادا کرنے میں ناکام نظر آرہا ہے، شہر میں غیراعلانیہ ایمرجنسی نافذ ہوگئی ہے، گندگی تعفن اور بہتے گٹر شہر کی حیثیت پر سوالیہ نشان ہیں، حکومت سندھ اور اسکے ادارے اپنی ناقص اور شرمناک کارکردگی کے باعث کسی بھی قسم کی ٹیکس وصولی کا جواز نہیں رکھتے، انھوں نے کہا کہ سندھ کے حکمرانوں کی ذہنی گندگی بدترین کارکردگی کی صورتمیں پورے شہر میں پھیل گئی ہے،ان گنت مسائل کے باوجود رواں سال حوصلہ افزاء عید سیل سیزن کراچی اور ملک کے معاشی مستقبل کیلئے نیک شگون ہے، شہر کی خوشحالی کا چمن امن کی کھاد کیلئے ترس رہا ہے، انصار بیگ قادری نے تقریب سے خطاب میں کہا کہ حکومتی وسائل کی غیرمنصفانہ تقسیم سے کراچی کے شہریوں اور تاجروں میں احساسِ محرومی پیدا ہورہا ہے، کراچی کے شہری موجودہ حکومت کو مینڈیٹ نہ دینے کی سزا بھگت رہے ہیں، شہر میں مذموم سازش کے تحت افراتفری، بے چینی اور بے یقینی کے حالات پیدا کیئے جارہے ہیں، AKTIکے وائس چیئرمین اکرم رانا نے مقامی سرمایہ کاروں کی ہمت، حوصلے اور حب الوطنی کو قابلِ تحسین قرار دیتے ہوئے کہا کہ شہر میں مستقبل کی بے یقینی اور خدشات کے باوجود ریڈی میڈ گارمنٹس کے کاروبار میں اربوں روپے کی سرمایہ کاری نے شہر کی کاروباری زندگی ڈوبتی نبضوں میں زندگی کی امید پیدا کردی ہے، رواں سال عید پر فروخت ہونے والی مصنوعات میں ریڈی میڈ گارمنٹس کا حصہ 80فیصد تھا انھوں نے کہا کہ شہر کے غیریقینی اور پُرآشوب حالات میں سرمایہ کاری کرنا انتہائی ہمت اور آگ میں پھول کھِلانے کے مترادف ہے، انھوں نے تاجر برادری کو یقین دلایا کہ شہر کی پرانی حیثیت اور شناخت ضرور بحال ہوگی جس کیلئے تمام طبقات کو بہتری کی جد و جہد میں شریک کرنا ہوگا۔ #

Archives