مودی کا دورہ لیہہ،اگلے ہفتے متوقع،سرینگرلیہہ ٹرانسمیشن لائن کا افتتاح کریں گے

نئی دہلی (ثناء نیوز) بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی اگلے ہفتے ریاست کے ایک اور دورے کے دوران سرینگر لیہہ بجلی ٹرانسمیشن لائن کا سنگ بنیاد رکھنے کے علاوہ لداخ میں دو بجلی پروجیکٹوں کی افتتاحی رسم انجام دیں گے۔ یہ وزیراعظم کاعہدہ سنبھالنے کے بعد نریندر مودی کا جموں کشمیر کا دوسرا دورہ ہوگا۔ پاور گرڈ کارپوریشن آف انڈیا(PGCIL)اور نیشنل ہائیڈرو الیکٹرک پاور کارپوریشن (NHPC) نے وزیر اعظم سے استدعا کی تھی کہ وہ لداخ خطے میں تعمیر کئے گئے دو نئے بجلی پروجیکٹوں کی اپنے ہاتھوں سے افتتاحی رسم انجام دیں اور سرینگر لیہہ ٹرانسمیشن لائن کا سنگ بنیاد رکھیں۔وزیر اعظم آفس کی طرف سے دونوں اداروں کو اس بات سے باضابطہ طور پر آگاہ کیا گیا ہے کہ نریندر مودی 12اگست کو لداخ کا دورہ کریں گے۔ واضح رہے کہ بھاجپا سے ہی وابستہ سابق وزیر اعظم ہند اٹل بہاری واجپائی نے اگست2003میں ریاست کے تین روزہ دورے کے دوران سرینگر لیہہ ٹرانسمیشن لائن بچھانے کا اعلان کیا تھا تاکہ لیہہ میں سرما کے سخت مہینوں کے دوران بجلی کی سپلائی کو یقینی بنایا جائے۔اس یکطرفہ لائن کی مدد سے لیہہ کو بجلی کے شمالی گرڈ کے ساتھ جوڑ دیا جائے گا ۔اس کا اعلان ریاست کے لئے خصوصی اقتصادی پیکیج کے تحت کیا گیا تھا اور اس وقت اس پروجیکٹ پر مجموعی طور300کروڑ روپے صرف ہونے کا اندازہ لگایا گیا تھا۔اس بارے میں اگر چہ پاور گرڈ کارپوریشن نے سروے عمل میں لاکر تفصیلی رپورٹ بھی مرتب کی تھی لیکن بعد میں اس پر کوئی پیش رفت نہ ہوئی اور معاملہ التوا میں پڑا رہا۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اب چونکہ کرگل ضلع کے چھوتک علاقہ میں44میگاواٹ صلاحیت والا پن بجلی پروجیکٹ اور لیہہ ضلع کے نیمو بازگو میں45میگاواٹ والا پروجیکٹ مکمل کرلیا گیا ہے، پاور گرڈ کارپوریشن اور این ایچ پی سی نے دونوں پروجیکٹوں کا افتتاح کرنے کے علاوہ سرینگر لیہہ ٹرانسمیشن لائن کی تعمیر شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لئے وزیر اعظم نریندر مودی کو دعوت دی گئی ہے۔۔nt/ah/wa

Archives