دتہ خیل میں ڈرون حملے کے نتیجے میں7مشتبہ شدت پسند ہلاک

دتہ خیل میں ڈرون حملے کے نتیجے میں7مشتبہ شدت پسند ہلاک

پشاور (ثناء نیوز)شمالی وزیرستان کی تحصیل دتہ خیل میں ڈرون حملے کے نتیجے میں7 مشتبہ شدت پسند ہلاک ہو گئے ۔شمالی ویرستان کی تحصیل دتہ خیل کے علاقے لواڑہ منڈی میں امریکی ڈرون طیاروں نے ایک مکان اور گاڑی پر 4 راکٹ داغے جس سے مکان اور گاڑی مکمل طور پر تباہ جبکہ اس میں موجود 7 افراد ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے انٹیلیجنس ذرائع کا کہنا ہے کہ حملے میں دو شدت پسند زخمی بھی ہوئے ہیں۔ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں تازہ تر غیر ملکی شامل ہیں،لیکن انٹیلجنس حکام نے ہلاک ہونے والے افراد کی شناخت نہیں کی ہے۔ابتدائی رپورٹس کے مطابق حملے ایک مکان پر دو میزائل داغے گئے ہیں۔یہ ڈرون حملہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے خلاف ایک مکمل فوجی آپریشن جاری ہے۔رواں سال کے دوران پاکستان کے قبائلی علاقے میں یہ چوتھا ڈرون حملہ ہے۔اس سے قبل گزشتہ ماہ 19 جولائی کو بھی شمالی وزیرستان کی تحصیل دتہ خیل میں ایک ڈرون حملہ ہوا تھاجس میں کم سے کم آٹھ مشتبہ شدت پسند ہلاک ہوگئے تھے۔اس تازہ حملے کے بعد ابھی تک پاکستان دفترِ خارجہ کی جانب سے بھی کچھ نہیں کہا گیا ہے۔تاہم، ماضی میں بھی ڈرون حملوں پر پاکستانی حکام کا یہی موقف رہا ہے کہ یہ حملے اس کی خودمختاری اور سلامتی کی سخت خلاف ورزی ہیں۔واضح رہے کہ حکومت کی جان سے کالعدم تحریک طالبان پاکستان سے مذاکرات کے دوران ڈرون حملے بند ہوگئے تھے تاہم مذاکرات کے خاتمے کے بعد اس کا سلسلہ ایک مرتبہ پھر شروع ہوا تھا اور رواں برس اب تک 7 ڈرون حملے ہوچکے ہیں۔nt/shz/ah/jk

Archives