سوڈان میںحزبِ اختلاف کا عبوری حکومت کے قیام کا مطالبہ

خرطوم(ثناء نیوز)سوڈان کی ایک بڑی اپوزیشن جماعت نے ملک کو درپیش مختلف بحرانوں کے حل کے لیے عبوری حکومت کے قیام کا مطالبہ کیا ہے۔اب اصلاحات(ریفارم نو)نامی اس جماعت نے مختلف سیاسی جماعتوں کے ساتھ ایک مشترکہ بیان جاری کیا جس میں کہا گیاکہ صدر عمر حسن البشیر کی جانب سے بلائے گئے قومی سیاسی مباحثے کی سفارشات کی روشنی میں عبوری انتظامیہ کو اقتدار سونپا جانا چاہیے۔ریفارم نو کے نائب سربراہ حسن عثمان رزیق نے خرطوم میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے آیندہ سال انتخابات منعقد کرانے کے اعلان پر بھی سیاسی جماعتوں کے درمیان بات چیت ہونی چاہیے اور یہ انتخابات مسلط نہیں کیے جانے چاہئیں۔انھوں نے نیوز کانفرنس میں حزب اختلاف کی جماعتوں کا بیان پڑھ کر سنایاجس میں کہا گیا ہے کہ ”ہمارا ان انتخابات سے کوئی واسطہ نہیں ہے کیونکہ انتخابات پر قومی مباحثے میں اتفاق رائے ہونا چاہیے”۔حزب اختلاف نے صدر عمر حسن البشیر کی دعوت پر سوڈان کو درپیش مسائل کے حل کے لیے قومی ڈائیلاگ میں حصہ لیا تھا۔nt/shz/ah/wa

Archives