حکومت مہلک بیماریوں کے علاج معالجہ کے لئے مطلوبہ فنڈز فراہم کر رہی ہے :مجتبیٰ شجاع الرحمن

لاہور (ثناء نیوز) وزیر ایکسائز و ٹیکسیشن، خزانہ پنجاب مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت مہلک بیماریوں کے علاج معالجہ کے لئے مطلوبہ فنڈز ترجیحی بنیادوں پر فراہم کر رہی ہے تاکہ خطرناک امراض میں مبتلا افراد کا علاج کر کے انہیں معاشرے کا مفید شہری بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ عوام نے مختلف اعضاء کے عطیات دینے سے متعلق شعور بیدار کیا جائے کیونکہ ہر سال 50 ہزار افراد گردوں کے ناکارہ اور 10 ہزار امراض جگر اور 6 ہزاردل کے کام چھوڑ جانے کی وجہ سے موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شعبہ صحت کے لیے 121۔ارب 80 کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں جو پنجاب کے بجٹ کا11.66 فیصد ہے ۔ڈاکٹرز ، پیرا میڈکس اور غیر سرکاری فلاحی تنظیم کے وفودسے ملاقات کے دوران مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ موجودہ حکومت خطرناک‘ پیچیدہ امراض کے علاج اور اعضاء کی پیوند کاری کے لئے پبلک سیکٹر طبی اداروں کو خصوصی اقدامات کے لئے فنڈز فراہم کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سماجی خدمت کے لئے وقت اور سرمایہ وقف کرنے والے مخیرحضرات معاشرے کا اثاثہ ہیں اور حکومت ہمیشہ ایسے افراد اور اداروں کی حوصلہ افزائی کرے گی۔ا نہوں نے کہا کہ 4۔ ارب روپے سے ہیلتھ انشورنس سکیم کا اجراء بھی کیا جارہا ہے جس سے کم آمدنی والے افراد سرکاری ہسپتالوں کے علاوہ بہترین نجی طبی اداروں میں علاج کی مفت سہولت حاصل کر سکیں گے۔ جبکہ کم وسائل رکھنے والے لوگوں کو صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کے لئے 8ارب 75 کروڑ روپے خرچ کئے جا رہے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ امراض گردہ میں مبتلاغریب مریضوں کو مفت ڈائیلاسسز کے لئے 60 کروڑ روپے جاری کئے گئے ہیں۔#

Archives