اولمپٔین منورالزماں نے شاندار کھیل کے ذریعے ملک کا نام روشن کیا؛ محفوظ یار خان

اولمپٔین منورالزماں نے شاندار کھیل کے ذریعے ملک کا نام روشن کیا؛ محفوظ یار خان

کراچی(ثناء نیوز) پاکستانیز ہیروز ویلفیئر آرگنائزیشن (رجسٹرڈ) اور آل پاکستان منورالزماں (مرحوم) اسپورٹس اینڈ ویلفیئر آرگنائزیشن کے سربراہ ایس ایم سبطین نقوی نے بین الاقوامی شہرت یافتہ اولمپیئن و فل بیک منورالزماں (مرحوم) کی 20 ویں برسی کے موقع پر گذشتہ روز اُم حذیفہ پارک بفرزون نارتھ کراچی میں تعزیتی جلسہ کا انعقاد کیا۔ جس کے مہمان خصوصی ایمیٹی انٹرنیشنل و عوامی مسلم لیگ (محفوظ) کے سربراہ محفوظ یار خان ایڈوکیٹ نے کہاکہ اولمپٔین منورالزماں نے بین الاقوامی سطح پر اپنے شاندار کھیل کے ذریعے ملک کا نام روشن کیا اور سبز حلالی پرچم دنیائے ہاکی کے میدانوں پر لہرایا۔ منور الزماں نے آخری سانس تک قومی ہاکی کھیل کیلئے اپنی پوری زندگی وفد کردی تھی۔ اُنہیں ہمیشہ اُن کے شاندار کارناموں کے ذریعے خراج عقیدت پیش کیا جاتا رہے گا۔ آرگنائزیشن کے صدر سید ذوالفقار حسین شاہ نے کہا کہ فل بیک منورالزماں جیسے محب وطن کھلاڑی صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں اور موجودہ دور میں قومی ٹیموں نے جس کھیل کا مظاہرہ کیا ہے اُس سے دنیائے کھیلوں میں پاکستان کو ناکامی کے سوا کچھ نہیں ملا ۔ موجودہ دور میں بھی منورالزماں جیسے کھلاڑیوں کی قومی ہاکی ٹیم کو اشد ضرورت ہے اور اُنہوں نے وزیر اعظم سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ قومی کھیلوں کے حوالے سے سنجیدگی کے ساتھ ایسے فیصلے کریں کہ جس سے ہمارے ملک کے کھیلوں کو دوبارہ عالمی سطح پر عزت کا مقام مل سکے۔ آرگنائزیشن کے جنرل سیکریٹری ایس ایم سبطین نقوی نے کہا کہ اولپیئن منور الزماں کو ہم سے جدا ہوئے 20 سال گزر گئے لیکن ایسا لگتا ہے کہ یہ عظیم کھلاڑی آج بھی دنیائے ہاکی کے میدانوں پر راج کررہا ہے ۔ انہوں نے بحیثیت کھلاڑی و کپتان و کوچ بین الاقوامی سطح پر اپنے کھیل کے ذریعے ملک کا نام روشن کیا اور اُن کی قیادت میں قومی ہاکی ٹیم نے مسلسل کامیابی کا ریکارڈ قائم کرکے ایک نئی تاریخ رقم کی ۔ لیکن بدنصیبی ہے کہ ہمارے ملک میں قومی کھلاڑیوں کے وفات کے موقع پر بھی خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے حکومتی سطح پر کوئی اجتماعات منعقد نہیں کیئے جاتے اور جو تنظیمیں انعقاد کرتیں ہیں اُن کی سرپرستی کرنا گوارا نہیں کیا جاتا ۔ سبطین نقوی نے اُن اخبارات میں بھی سخت الفاظ میں تنقید کرتے ہوئے کہا کہ برسی کے موقع پر بھی نہ تو آرٹیکل نہ ہی خبروں کے ذریعے کھلاڑیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے زحمت گوارا نہیں کرتے جبکہ پڑوسی ملک کے چھوٹے سے چھوٹے فنکار و کھلاڑیوں کی سالگرہ و برسی کے موقع پر اپنے اخبارات کے ذریعے اُنہیں خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے کوئی بھی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیا جاتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم تمام اخبارات کے ایڈیٹر و تمام ٹی وی چینلز کے نیوز ایڈیٹران سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنے بھی ملک کے قومی ہیروز کو جو زندہ ہیں اُن کو خراج تحسین اور جو آج ہم میں موجود نہیں ہیں اُن کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے خصوصی ایڈیشن و پروگرام پیش کریں۔ تعزیتی جلسہ سے شاکر ہاشمی، عالمدار اسلم، شاہد مرزا، محمد عارف قادری، حامد خان غوری، نصرف حسین، منور زیدی، جاوید نقوی ودیگر کا خطاب۔ دریں اثناء تعزیتی جلسہ سے قبل اولمپیئن منورالزماں (مرحوم) کی قبر پر 3 بجے سہ پہر محفوظ یار خان ایڈوکیٹ، سید ذوالفقار حسین شاہ، سید شاکر حسین ہاشمی، ایس ایم سبطین نقوی، جاوید حسین نقوی، نصرت حسین، حامد خان غوری، محمد ارشد، محمد اقبال، شاہد مرزا، سینئر صحافی اظہر عباس زیدی، محمد نذیر، پھول محمد خان، سردار محمد یونس، محمد روشن اور دوست محمد نے قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور مرحوم کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی۔ #

Archives