مسئلہ کشمیر کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ضرورت ہے شبیر احمد ڈار

سرینگر)ثناء نیوز)مسلم کانفرنس چیئرمین شبیر احمد ڈارنے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ضرورت ہے تاکہ بھارت کشمیر میں جس منصوبہ بند نسل کشی میں عمل پیرا ہے اسے روکا جاسکے ۔ سنگرامہ سوپورمیں کارکنوں کی ایک نشست سے خطاب کرتے ہوئے شبیر ڈار نے کہاکہ مسلم کانفرنس اپنے وجود سے ہی مسلہ کشمیر کے دائمی اور منصفانہ حل کیلئے کوششیں کر رہی ہے اور حقیقت بھی یہی ہے کہ مسلم کانفرنس کا وجود کشمیریوں کو غلامی کوذلت بھری زندگی سے نجات دلانے کیلئے عمل میں لایاگیا۔انہوںنے کہاکہ کشمیریوں کی آزادی کیلئے ایک منظم اور مربوط سیاسی جدوجہدمسلم کانفرنس کے جھنڈے تلے ہی شروع ہوئی اور آج بھی اسی جذبے اورلگن سے جاری ہے اپنے سیاسی حقوق کیلئے میدان کارزارمیںاس تنظیم کے کارکنوں نے قربانیوں کی ایسی تاریخ رقم کی ہے جو ہمارے لئے سب سے قیمتی اثاثہ ہے اور آج بھی ہمارے لئے مشعل راہ ہی۔ شبیر ڈارنے کہامسئلہ کشمیر کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ضرورت ہے تاکہ بھارت کشمیر میں جس منصوبہ بند نسل کشی میں عمل پیرا ہے اسے روکا جاسکے اور جس مطالبے کو لیکر کشمیر کے لوگ جدوجہد میں مصروف ہیںانہیں وہ حق مل سکے جس سے برصغیر پاک و ہند میں امن اور ترقی کا دور شروع ہو سکی۔ انہوںنے کہاکہ اس تلخ سیاسی حقیقت کو بھی ہمیں نہیں بھولنا چاہیے کہ اگر برصغیر کے امن کو کسی چیز سے سب سے زیادہ خطرات لاحق ہے تو وہ مسئلہ کشمیر کے حل میں تاخیر اور یہاں معصوم لوگوں کیخلاف جاری ریاست تشدد اور ظلم جبر ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر کوحل کرنے میں نہ صرف مجرمانہ تاخیر برت رہاہے ۔شبیر ڈارنے کہا کہ بھارت اپنے فوجی قبضے کو دوام بخشنے کیلئے کتنے ہی داو پیچ استعمال کری، ترقی اور تعمیر کی کتنے ہی کھوکھلے اعلانات کرے لیکن وہ کشمیریوں کے آزادی کے مطالبے کے اجتماعی اور شعوری فیصلے کو کسی طور بھی بدل نہیں سکتا ہی۔ شبیر ڈارنے کہا کہ قربانیاں جو عظیم مقاصد کی عمل آوری کیلئے دی گئی ہوں ہر حال میں رنگ لاتی ہیں ہم نے بھی بحثیت مجموعی قربانیوں کا جو نہ رکنے والا سلسلہ شروع کیا ہے وہ بہت جلد آزادی کی شکل میں ہمارے شہدا کے دیکھے ہوئے خوابوں کی تعبیر بن کر سامنے آئے گا۔۔nt/ah/wa

Archives