لولاب کے جنگلات میںچرواہوں کی مارپیٹ

سرینگر (ثناء نیوز)لولاب کے ایک جنگل میں اپنے مال مویشیوں کو چرانے کی غرض سے جا رہے 6افراد کو بھارتی فوجی اہلکاروں نے تشدد کا نشانہ بنایا۔ مقامی لوگوں نے مظاہرے کئے اور ملوث اہلکاروں کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ۔ ہارڈون لولاب سے تعلق رکھنے والے نذیر احمد ملہ ولد حبیب ملہ ، عاشق حسین ولد عبدلرشید ، مشتاق احمد ولد عبدلرشید، جاوید احمد شیح ولد شریف الدیں ، شاہ ولی ولد میر ولی، بشیر احمد ملا ولد عبدلرحمان، اپنے مال مویشوں کو جنگل کی طرف لئے جا رہے تھے تو اس دوران فوج کی 18 آ ر آ ر سے وابستہ اہلکاروں نے ان کو روکا اور ایک ہی جگہ جمع کیا جس کے بعد ایک ایک کر کے ان کی شدیدمار پیٹ کی ۔ ایک شہری نے بتایا کہ فوج نے ان کی کلہاڑیوں کے دستوںاور بندوق کے بٹوں سے مار پیٹ کی جس کے نتیجے میں تمام افراد کی بازوں اور ٹانگوں میں چوٹیں آئیں۔انہوں نے کہا کہ چلانے اور شور مچانے کی وجہ سے وہاں مقامی لوگ جمع ہو ئے جنہوں نے انہیں اٹھا کر زخمی حالت میں علاج کیلئے سب ضلع ہسپتال سوگام پہنچایا جہاں ان کی مرہم پٹی کی گئی۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے پولیس چوکی کولی گام میں شکایت درج کرائی لیکن پولیس کی جانب سے فوج کے خلاف معاملہ درج کرنے کے متعلق لیت ولعل سے کام لیا جا رہا ہے ۔اس دوران مقامی لوگوں نے اس واقعہ کے خلاف احتجا ج کر تے ہو ئے فوجی زیادتیوں پر قدغن لگانے کی مانگ کی۔ ان کا کہنا ہے کہ فوجی اہلکار بلاجواز اور مختلف بہانے کر کے لوگوں کی شدید مار پیٹ کرتے ہیں اور ان کے خلاف کوئی بھی کارروائی نہیں کی جاتی ہے ۔nt/ah/qa

Archives