سیاحتی مقامات کو مذہبی رنگ میں رنگنا ناقابل قبول: شبیر شاہ

سرینگر (ثناء نیوز)حریت کانفرنس جے کے کے نظر بندرہنما شبیر احمد شاہ نے بھارت سرکار کے ان منصوبوں پر جو مسئلہ کشمیر کے حوالے سے آ ہستہ آہستہ منظر عام پر آرہے ہیں ،اپنی گہر ی تشویش ظاہر کر تے ہو ئے کہا ہے ہم اپنی تحریک آ زادی کو دبانے کی ہر اس بھارتی سازش کا مقابلہ کر نے کیلئے تیار ہیں جسکا مقصد کشمیر کی جغرافیائی وحدت کو نقصان پہنچا نا ہو ،یہاں کی آ بادی کا تناسب تبدیل کر نا ہو یایہاں کی تہذیبی شناخت کو ختم کر نا اور یہاں کے سیاحتی مقامات کو مذہبی رنگ میں رنگنا ہو ۔ شبیر شاہ نے کہا کہ کا لے قوانین کا اطلاق ،فورسز کی گو لیوں کی بوچھاڑ ،پو لیس کی پکڑ دھکڑ ،قائدین کی گر فتاریاں اور خانہ نظر بندیاں ایک معمول بن چکا ہے لیکن افسوس ہے کہ اب یہاں کے قدرتی آ بی ذخیر ے کوثر ناگ کو جسکا صاف وشفاف پا نی یہاں کی زندگی ہی، اب ایک تیرتھ استھان کی شکل میں پیش کیا جا نے لگا ہی، بھارت سرکار کے اس منصوبے سے نہ صرف یہاں کا ماحولیاتی توازن بگڑ جا ئیگا بلکہ یہاں کی سماجی زندگی پر بھی اسکے منفی اثرات مرتب ہو نگے ۔شاہ نے خبردار کیا کہ اس قسم کے سیاسی منصوبے خطرناک نتا ئج کا سبب بن سکتے ہیں ۔انہوںنے کہا ہماری تحریک بنیادی طور پر ایک سیاسی تحریک ہے جس طرح بر صغیر کے عوام انگریز کے غلام تھے اور انکی غلامی سے نجات پا نے کیلئے آ زادی کی جد وجہد کر چکے ہیں، اسی طرح ہم آ ج بھارت کے غلام ہیں اور ہم بھارت کی غلامی سے آزادی حاصل کر نے کی جد وجہد کر رہے ہیں ۔ شبیر شاہ نے اپنے بیان میں مزیدکہا ہم نے حصول حق خودارادیت کیلئے قربانیاں دی ہیں اور اسوقت تک دیتے رہیںگی، جب تک مسئلہ کشمیر کا ایسا منصفانہ حل نہیں نکلتا ہے جو کشمیر ی حریت پسندوں کیلئے قابل قبول ہو۔nt/ah/qa

Archives