قدغنوں سے مزاحمتی تحریک دبنے والی نہیں : یاسین ملک

سرینگر (ثناء نیوز) جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نیرواں جدوجہد اور قربانیوں کو لازوالقراردیتے ہوئے کہاہے کہ قائدین پرقدغن سے کشمیریوں کی تحریک کودبایانہیں جاسکتا ہی۔محمد یاسین ملک جنہیں دو روز قبل اپنے گھر سے گرفتار کرلیا گیا تھا ہنوز پولیس کی قید میں ہیں ۔ پولیس اور فورسز کی بھاری جمعیت نے 31 جولائی اور یکم اگست کی درمیانی رات کوملک یاسین کے گھر کو گھیرے میںلے کر انہیں گرفتار کرکے تھانہ کوٹھی باغ میں مقید کرلیا تھا جبکہ پولیس نے فرنٹ کے نائب چیئرمین شوکت احمد بخشی کو بھی دو دن سے انکے گھر واقع بمنہ پر خانہ نظر بند کررکھا ہی۔ لبریشن فرنٹ کے ترجمان نے محمد یاسین ملک کی گرفتاری اور مسلسل اسیری اور دوسرے قائدین کی نظربندی کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے اور ایسے اقدامات حکمرانوں کی صریح بوکھلاہٹ ہے ۔ ترجمان نے ان جمہوریت کش اقدامات کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ گرفتاریوں ،نظر بندیوں اور دوسرے آمرانہ اقدامات کرنے والے حکمرانوں کو جمہوریت کی باتیں زیب نہیں دیتیں ہیں۔ درایں اثنا فرنٹ نے سید عرفان الحسن شاہ اور محمد مقبول ملک کو ان کی برسیوں پر یاد کرتے ہوئے شاندار الفاظ میں خراج عقیدت ادا کیا ہی۔ محبوس یاسین ملک نے ان دونوں عظیم نفوس کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت ادا کیا اور کہاکہ انکی جدوجہد اور قربانیاں بھی لازوال ہیں اور کوئی بھی کبھی بھی انہیں فراموش نہیں کرسکتا۔ یاسین ملک نے دونوں شہدا کیلئے بلندی درجات کی دعا کرتے ہوئے انکی جدوجہد اور مشن کو اسکی حتمی منزل کے حصول تک جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔nt/ah/qa

Archives