وفاقی حکومت کا انسدادِ پولیو مہم شروع کرنے کے لیے حکومتِ سندھ کو خط

اسلام آباد(ثناء نیوز)حکومتِ سندھ کو اسلام آباد کی جانب سے ایک خط موصول ہوا ہے، جس میں صوبے اور خصوصا کراچی میں وسیع پیمانے پر انسدادِ پولیو مہم شروع کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کے آغاز کے بعد سے نقلِ مکانی پر مجبور ہونے والے افراد کی صوبے میں آمد پر بطور پیش بندی یہ اقدام اٹھانے کے لیے کہا گیا ہے۔ایک انگریزی اخبار کے مطابق صوبائی محکمہ صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ انہیں ایک خط پچھلے ہفتے اسلام آباد سے موصول ہوا تھا، جس میں کہا گیا ہے کہ معذور کردینے والی اس بیماری کا مقابلہ کرنے کے لیے زیادہ سے زیادہ کوششیں کی جائیں۔ اس بیماری کے بڑھتے ہوئے واقعات کے نتیجے میں عالمی ادارہ صحت کی جانب سے پاکستان پر سفری پابندیاں عائد ہوئی ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اسلام آباد میں حکام سندھ میں خاص طور پر رمضان کے دوران پولیو کے خاتمے کے حوالے سے متعلقہ حکام کی سرگرمیوں کے بارے میں جاننا چاہتے ہیں۔یہ خط جسے حکام نے سرکاری یادداشت قرار دیا ہے، کہا گیا ہے کہ یہ مہینہ نہایت اہم ہے، اس لیے کہ یہ عالمی ادارہ صحت کی پابندیوں کے فورا بعد آیا ہے اور ضرورت اس بات کی ہے کہ اس دوران بہت زیادہ کوششیں کی جائیں۔ایک ذرائع نے اس دستاویز کے مواد کا حوالہ دیتے ہوئے کہا یہ وقت ہے کہ پولیو کے خلاف جنگ میں آگے بڑھا جائے، اس لیے کہ پہلے ہی اس مرض سے ملک کو کافی حد تک نقصان پہنچ چکا ہے۔تاہم حکام نے دعوی کیا کہ انہوں نے پولیو کے جڑ سے خاتمے کے لیے تمام دستیاب وسائل کے ساتھ پورا مہینہ صرف کیا تھا، جس میں انسدادِ پولیو کی کئی مہمات بھی شامل ہیں، جن کی سیکیورٹی کی وجوہات کے پیش نظر میڈیا میں تشہیر نہیں کی گئی۔ ان مہمات کا انعقاد کراچی کے مغربی اور مشرقی کناروں پر واقع شہر کے سب سے زیادہ حساس علاقوں میں کیا گیا تھا۔لیکن انہوں نے تسلیم کیا کہ سیکیورٹی کی عدم دستیابی کی وجہ سے انسدادِ پولیو کی بہت سے مہمات چلائی نہیں جاسکی ہیں۔موجودہ صورتحال میں پولیس کے تحفظ کی ضرورت ہے اور ان علاقوں میں جہاں پولیو مہم کا ارادہ ہے، ڈبل سواری پر پابندی عائد کی جائے گی۔ یہ اقدام حالیہ حملوں کے بعد لازم قرار دے دیا گیا ہے، جس میں کئی رضاکار ہلاک اور بہت سے زخمی ہوئے تھے۔کسی رضاکار کو اجازت نہیں ہے کہ وہ پولیس تحفظ کی غیرموجودگی میں پانچ سال کی عمر تک کے بچوں کو پولیو ویکسین پلائے۔shj/ily

Archives