اسرائیلی فوجوں کی بمباری ،مزید 101 فلسطینی شہید

اسرائیلی فوجوں کی بمباری ،مزید 101 فلسطینی شہید

غزہ(ثناء نیوز)نہتے فلسطینیوں کے خون کے پیاسے اسرائیل نے ایک بار پھرطے شدہ جنگ بندی ختم کر کے غزہ کے باسیوں پر قیامت ڈھا دی ، اسرائیل کی جارحیت کے چھبیسویں روز کے آغاز میں ہی مزید 101 فلسطینی شہید ہوگئے ، اسرائیل کی وحشیانہ بمباری میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 1650ہو گئی ۔ ایک بار پھر اسرائیل نے تمام اخلاقی اور قانونی حدود کو پھلانگتے ہوئے تین روزہ جنگ بندی کے بعد غزہ پر دوبارہ بمباری شروع کر دی ہے ۔ جنگ بندی کے کچھ ہی گھنٹوں کے بعد اسرائیلی فوج نے دوبارہ غزہ کے نہتے شہریوں کو نشانہ بنانا شروع کر دیا ۔ ہمیشہ کی طرح اسرائیل نے ڈھٹائی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک بار پھرسارا ملبہ حماس پر ڈال دیا ہے ۔ اسرائیلی فوج کا کہنا ہے حماس نے ایک اسرائیلی فوجی کو پکڑا جس کے بعد جنگ بندی ختم کی گئی ۔ غزہ میں ہر طرف تباہی بربادی اور ویرانی چھائی ہوئی ہے۔ ۔اسرائیل جنگ بندی کی آڑ میں پہلے بھی کئی بار نہتے فلسطینیوں کو نشانہ بنا چکا ہے ۔ بچے ہوں یا خواتین اسرائیلی بربریت سے کوئی بھی نہیں بچ سکا ہے ۔ اسرائیل ٹینکوں نے تازہ کارروائی میں غزہ کے علاقے جنوبی رفاہ کو نشانہ بنایا، شدید بمباری سے بچوں اور خواتین سمیت چالیس فلسطینی شہید ہو گئے ۔ بعد میں اسرائیلی فورسز نے رفاہ امداد کیلئے جانے والے ٹرکوں کو بھی نشانہ بنایا ۔ مغربی کنارے میں بھی اسرائیلی فورسز نے موت بانٹنا شروع کر دی ہے ۔ تازہ جھڑپوں میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے ایک اور فلسطینی شہید ہوگیا، جس کے بعد شہدا کی تعداد بارہ ہوگئی ۔ امریکا نے حسب روایت جنگ بندی کی خلاف ورزی پر حماس کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔ وائٹ ہاس کا کہنا ہے حماس کی جانب سے اسرائیلی فوجی کی گرفتاری قابل مذمت ہے ۔ حماس نے اسرائیلی فوجی کی گرفتاری کی تردید کردی ہے، حماس کا کہناہے اسرائیلی فوجی کا بہانہ بنا کرمسلسل جنگ بندی کی خلاف ورزی میں مصروف ہے ۔ اسرائیلی بربریت کا مقابلہ کرنے کیلئے لبنانی تنظیم حزب اللہ سے مدد مانگ لی ہے۔shj/ily

Archives